1. محترم مہمان السلام علیکم! فروغ نعت فورم میں سوشل شیئر کا آپشن شامل کیا گیا ہے۔ جب آپ کوئی نیا موضوع شروع کرتے ہیں تو موضوع کے شروع ہو جانے پر موضوع کے اوپر یہ آپشن ظاہر ہوتا ہے اس آپش پر کلک کرنے سے مختلف سوشل نیٹ ورکس کے آئکان ظاہر ہوتے ہیں آپ اپنی پسند کے نیٹ ورک پر اسے شائع کر سکتے ہیں۔میری دوستوں سے درخواست ہے کہ جب بھی کوئی کلام فورم میں شامل کریں تو سوشل شیئر بٹن کے ذریعہ اس کو فیس بک ، ٹویٹر اور گوگل پلس وغیرہ پر بھی شیئر کر دیا کریں اور اگر ممکن ہو تو جس کا کلام ہو اس کی فیس بک وال پر بھی شیئر کیا کریں تاکہ فورم کی ٹریفک میں اضافہ ہو اور لوگوں کی آمد و رفت رہے۔ جوکہ اس فورم کی مقبولیت کے لیے بہت ضروری ہے۔

تضمین حق جلوہ گر ز طرزِ بیانِ محمد است

'انتخابِ تضمینات' میں موضوعات آغاز کردہ از میاں عمر, ‏اگست 12, 2016۔

  1. میاں عمر

    میاں عمر Member رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    38
    اعجاز از خواصِ لسانِ محمدۖ است
    عین الحیٰوة گم بہ دہانِ محمدۖ است
    گر نور و گر ہدیٰ کہ ازانِ محمدۖ است
    حق جلوہ گر ز طرزِ بیانِ محمدۖ است
    آرے کلامِ حق بہ زبانِ محمدۖ است

    اے خامہ وصف قامت معشوق کم نگار
    اے دل سخن ز راست قداں درمیان میار
    قمری ز ذکرِ سرو نفس را نگاہ دار
    واعظ حدیثِ سایۂ طوبیٰ فرو گزار
    کایں جا سخن ز سروِ روانِ محمدۖ است

    شاہد بہ قتلِ عاشق و عاشق بہ خال و خد
    مجنوں بہ پاے لیلی و لیلیٰ بہ فرقِ خود
    مومن بہ آلِ احمدۖ و آلش بروحِ جد
    ہر کس قسم بدانچہ عزیز ست می خورد
    سوگندِ کردگار بجانِ محمدۖ است

    آں جا کہ از مناقب عترت سخن رود
    وز آل و از صحابۂ امت سخن رود
    واں کایں ہمہ ز ختمِ رسالت سخن رود
    ور خود ز نقشِ مہر نبوت سخن رود
    آں نیز نامور ز نشانِ محمدۖ است

    بینی اگر بدیدۂ دراک وارسی
    گوئی اگر بہ عالمِ ادراک وارسی
    سنجی اگر بہ مرتبۂ خاک وارسی
    دانی اگر بہ معنیِ لولاک وارسی
    خود ہر چہ از حق است ازانِ محمدۖ است

    لطفِ خداست گر بہ سرِ کس نہاد دست
    قہرِ خداست چوں ز سرِ کیں بجملہ جست
    داند کسے کہ شد ز مئے ”مارمیت” مست
    تیرِ قضا ہر آئنہ در ترکشِ حق است
    اما کشاد آں ز کمانِ محمدۖ است

    ہمت بہ مدح شہ من و حالی گما شتیم
    گفتیم و از نگاشتنی ہا نگاشتیم
    چوں کام و لب فراخورِ وصفش نہ داشتیم
    غالب ثناے خواجہ بہ یزداں گزاشتیم
    کاں ذاتِ پاک مرتبہ دانِ محمدۖ است

    ترجمہ بند اول:
    معجز بیانی حضورۖ کی زبانِ پاک کی خاصیت ہے۔ آپ حیات حضورۖ کے لعب دہان کا نام ہے۔ جیسے کہ روشنی اور ہدایت حضورۖ کے وجود سے ہے اس لیے حق ظاہر ہوا حضرت محمدۖ کے بیان سے بے شک حق کا کلام حضورۖ کی زبان سے جاری ہوا۔

    ترجمہ بنددوم :
    اے قلم معشوق کے پیکر کی تعریف میں مبالغہ نہ کر، اے دل بلند قدروں کی یہاں بات چیت نہ کر، اے قمری سرو کی مدح سرائی سے منہ بند کرلے۔ اے واعظ طوبیٰ کے سایہ کی بات چھوڑدے کیوں کہ اب یہاں حضرت محمدۖ کے سرو رواں کا ذکر ہورہا ہے۔

    ترجمہ بندسوم :
    معشوق عاشق کے قتل کی اور عاشق معشوق کی صورت اور خال کی، مجنوں لیلا کے پاوں او رلیلا اپنے سر کی، مومن آل بنیۖ کی اور آل نبیۖ اپنے جدّ اقدس کی عظمت اور محبت کی قسم کھاتے ہیں اسی لیے اللہ نے بھی حضرت محمدۖ کی جان کی قسم کھائی ہے۔

    ترجمہ بندچہارم :
    جہاں خاندان رسولۖ کے فضائل کی بات چھڑی ہے جس مقام پر آل نبیۖ اور اصحاب رسول کی گفتگو ہوئی ہے جہاں ختم رسالتۖ کا چرچا ہے اور نقش مہر نبوت کا ذکر ہے سب کی فضیلت اور اہمیت حضورۖ کی نسبت سے ارفع اور معتبر ہوئی۔

    ترجمہ بندپنجم:
    اگر تو عمیق نظر سے سمجھنے کی کوشش کرے گا تو معلوم ہوگا کوئی کہے اگر کہ وہ عالم محسوسات یعنی کہکشاں کو سمجھتا ہے تو معلوم ہوگا اگر کوئی اس خاک دان سے واقفیت رکھتا ہے تو معلوم ہو گا اور اگر تو لولاک کے معنی سمجھ لے تو تجھے معلوم ہوگا جو کچھ خدا کا ہے وہ سب محمدۖ ہی کا ہے۔

    ترجمہ بندششم:
    اللہ کا لطف وفضل ہوتا ہے جب وہ کسی کے سر پر ہاتھ رکھ دے۔ اللہ کا قہر شامل ہوجاتا ہے جب کوئی درشت بات نکل جائے وہ جانتے ہیں جو شراب مارمیت کے نشے سے مست ہیں کہ تقدیر کا تیر بے شک اللہ کے ترکش میں ہے لیکن وہ محمدۖ کی کمان ہی سے چھوٹتا ہے۔

    ترجمہ بندہفتم:
    حضورۖ کی مدح کرنے کی میں (غالب)اور حالی نے ہمت باندھی ہے۔ ہم نے کہا اور جو کچھ بھی ہم سے لکھا گیا ہم نے لکھا۔ لیکن ہمارے زبان او رلب حضورۖ کی ثنا کے لائق نہ تھے اس لیے غالب نے حضرت محمدۖ کی ثنا کو حق تعالی پر چھوڑ دیا بے شک وہی محمدۖ کے مقام اور مرتبہ سے واقف ہے۔

    نعت: مرزا اسد اللہ خان غالب
    تضمین نگار: مولانا الطاف حسین حالی
    • زبردست زبردست x 2
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
    Last edited: ‏اگست 13, 2016
  2. محمد صہیب ثاقب

    محمد صہیب ثاقب New Member رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    23
    سبحان اللہ۔ نہایت عمدہ انتخاب !
    کیا ہے اچھا ہو اگر آپ اس زمین میں کہی گئی تمام نعتیں اس لڑی میں جمع کر دیں ! @میاں عمر
    • متفق متفق x 2
    • دوستانہ دوستانہ x 1
  3. شاہ بابا

    شاہ بابا فضائے نعت میں رہنے سے دل دھڑکتا ہے رکن انتظامیہ

    پیغامات:
    671
    سبحان اللہ۔ جزاک اللہ
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  4. شاہ بابا

    شاہ بابا فضائے نعت میں رہنے سے دل دھڑکتا ہے رکن انتظامیہ

    پیغامات:
    671
    چند ایک جگہ ٹائپنگ کی غلطیاں ہیں۔ انہیں دیکھ لیجیے گا
    • معلوماتی معلوماتی x 1
  5. میاں عمر

    میاں عمر Member رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    38
    جزاک الله! بھائی آپ میری مدد کر سکتے ہیں اس معاملے میں۔
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  6. میاں عمر

    میاں عمر Member رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    38
    @شاہ بابا نشاندہی فرما دیں۔ مہربانی!
  7. شاہ بابا

    شاہ بابا فضائے نعت میں رہنے سے دل دھڑکتا ہے رکن انتظامیہ

    پیغامات:
    671
    ازانِ محمدۖ است۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اذان ہے غالبا
    درمیان میار ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔درمیاں ہونا چاہیے
    کایں جا سخن۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ایں جا سخن ہو گا شاید
    واں کایں ہمہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یہاں بھی غالبا کایں کی جگہ ایں ہو۔ وزن کا مسئلہ آتا ہے کایں سے
    ازانِ محمدۖ است۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اذان
    آپ حیات حضورۖ کے لعب۔۔۔۔۔۔۔۔۔آبِ حیات غالبا
    آل بنیۖ کی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔آلِ نبی کی


    یہ سب میری ناقص فہم کے مطابق ہیں۔ دیکھ لیجئے۔ غلطی کی صورت میں درگزر کی درخواست ہے

    جزاک اللہ
    • معلوماتی معلوماتی x 1
    • تخلیقی تخلیقی x 1
  8. شاکرالقادری

    شاکرالقادری نعت گوئی مراحوالہ ہے رکن انتظامیہ رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    296
    ازانِ محمد است ==== درست ہے ==== از آنِ محمد است کی متبادل صورت ہے جس میں آن کی ایک الف کا اخفا ہے
    کایں جا سخن====== درست ہے۔۔۔۔ یہ دراصل ۔۔۔۔ کہ این جا ۔۔۔۔ کی متصل صورت ہے جس میں ہائے مختفی کا اخفا ہے اس کو یوں پڑھا جاتا ہے (کیں جا)
    واں کایں ہمہ ===== ایضا
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
    • معلوماتی معلوماتی x 2
  9. شاکرالقادری

    شاکرالقادری نعت گوئی مراحوالہ ہے رکن انتظامیہ رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    296
    بینی اگر بدیدۂ دراک وارسی
    گوئی اگر بہ عالمِ ادراک وارسی
    سنجی اگر بہ مرتبۂ خاک وارسی
    دانی اگر بہ معنیِ لولاک وارسی
    خود ہر چہ از حق است ازانِ محمدۖ است