اللہ والے

نذر حافی نے 'افسانوی ادب' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، اگست 1, 2012

  1. نذر حافی قلمکار

    پیغامات:
    30
    نذر حافی
    اللہ ہی اللہ کیا کرو
    ہر وقت ہر دم اللہ ہی اللہ
    اللہ کو بڑا مانو یا نہ مانو اس سے مجھے کوئی غرض نہیں اور ہاں بہتر یہی ہے کہ ۱للہ کو بڑا نہ مانو اس لیے کہ اگر اُسے بڑا مانو گے تو پھر میری نہیں مانو گے۔
    اچھا تو میں یہ کہہ رہا تھا کہ اللہ کو بڑا مانو یا نہ مانو اُسے بڑا ضرور کہو،ہر جگہ اعلان کرو اللہ سب سے بڑا ہے،بار بار اعلان کرو،اتنے اعلان کرو کے لوگ تمہیں اللہ کا نمائندہ سمجھے لگیں۔
    جب لوگ تمہیں اللہ کا نمائندہ سمجھنے لگیں تو پھر کسی کو اپنے سامنے سر اُٹھانے کی اجازت مت دو۔بازار کے ہر چوک اور گلی کے ہر موڑ پر جلاد بیٹھا دو۔
    تعزیرات اور فتووں کی بارش کر دو۔جو سر اُٹھا کر چلے وہ سر کاٹ دو،جس گھر سے بغاوت کی بو آئے اس گھر کو آگ لگا دو،جس بدن میں سرکشی کی لہر دکھائی دے اُسے سولی پہ لٹکا دو۔۔۔
    اگر لوگ چیخیں تو لوگوں سے کہو بھول گئے،میں اللہ والا ہوں۔میں تمہیں اللہ کی طرف دعوت دیتا ہوں،نماز کی طرف ،روزے کی طرف،جہاد کی طرف اور حج کے ساتھ ساتھ ریال اور ڈالر کی طرف۔
    جو میرے خلاف چیخے وہ گویا اللہ کے خلاف چیخا ہےاور آج کے بعد جو اللہ کے خلاف چیخے گا اس کی زبان کاٹ دی جائے گی۔اس لیے کہ اللہ کے خلاف چیخنا گناہ ہے، گناہ کبیرا۔۔۔
    یہ کہہ کر میرے انگریز آقا نے میرے ہاتھ میں پسٹل کی دو گولیاں تھمائیں،جنہیں جیب میں ڈالتے ہی میرے سینے میں عجیب بہادری جوش مارنے لگی،میری زبان پر اللہ ہی اللہ کے نعرے گونجنے لگے اور میری آنکھوں میں ہر بندہ بشر کیڑہ مکوڑہ نظر آنے لگا،سب گنہگار ،فاسق گمراہ اور مشرک دکھائی دینے لگے۔کچھ دیر بعد میں نے ارد گرد نگاہ دوڑائی تو ہر طرف کیڑے مکوڑے رینگ رہے تھے۔میں نے ان کیڑے مکوڑوں کو واصل جہنم کرنے کے لیے جیب سے گولیاں نکالنا چاہیں تومیں یہ دیکھ کر حیران رہ گیا کہ میری جیب سے دو کے بجائے چار گولیاں نکلیں۔
    میں نے ان چار گولیوں میں سے دو گولیاں اللہ اکبر کہہ کے بنگالیوں کے سینے میں اتاریں اور باقی دو گولیاں بقیہ پاکستان کے لیے رکھ دیں،ان باقی دو گولیوں میں سے ایک گولی میں آج کل مساجد،امام بارگاہوں اوراولیائے اکرام کے مزارات پر چلا رہا ہوں اور دوسری گولی میں نے بچا کر رکھی ہوئی ہے۔وقت آنے پر پاکستان کو بنگال کی طرح تقسیم کرنے کے لیے چلاوں گا۔۔۔اور۔۔۔ یہ تقسیم میں نہیں کرونگا بلکہ اللہ کرے گاچونکہ میں اللہ والا ہوں اور جو اس تقسیم کے خلاف بولے گاوہ گنہگار ہےچونکہ اللہ کے خلاف بولنا گناہ ہے۔۔۔گناہ کبیرہ۔
     nazarhaffi@yahoo.com

اس صفحے کی تشہیر